مریم نواز نے اپنی ہی پارٹی کے کن سینئر رہنماؤں کو مخبر اور غدار قرار دیا, سینئر صحافی  نے نام سامنے لا کر قومی سیاست میں نیا تہلکہ مچا کر رکھ دیا

مریم نواز نے اپنی ہی پارٹی کے کن سینئر رہنماؤں کو مخبر اور غدار قرار دیا, سینئر صحافی نے نام سامنے لا کر قومی سیاست میں نیا تہلکہ مچا کر رکھ دیا

مریم نواز نے اپنی ہی پارٹی کے کن سینئر رہنماؤں کو مخبر اور غدار قرار دیدیا سینئر صحافی رانا عظیم نے ان کے نام سامنے لا کر قومی سیاست میں نیا تہلکہ مچا دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سینئر صحافی رانا عظیم نے دعویٰ کیا ہے کہ حالیہ دنوں میں مریم نواز نے کئی لیگی رہنماؤں سے ملاقاتیں کیں،اور ایک رہنما پر الزام عائد کیا کہ آپ میری مخبری کرتے ہیں۔انہوں نے مذکورہ رہنما کو ڈانٹ بھی پلائی۔ مریم نواز کی ڈانٹ کے بعد دیگر لیگی رہنما خائف دکھائی دیتے ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ یہ واقعہ گلگت بلتستان کے انتخابات کے بعد کا ہے۔مریم نواز کو انتخابات سے پہلے ہی غصہ آیا ہوا تھا لیکن شکست کے بعد یہ غصہ بڑھ گیا۔ مریم نواز نے ایک اجلاس کے دوران مسلم لیگ ن کے چند رہنماؤں کا نام لیا جن میں لاہور سے تعلق رکھنے والے رہنما بھی شامل تھے۔ مریم نواز نے کہا کہ یہ لوگ ہماری باتیں آگے پہنچاتے ہیں۔یہ اس جگہ باتیں پہنچاتے ہیں جہاں نہیں پہنچنی چاہیے۔مریم نواز لاہور کے دو تین رہنماؤں کا کھل کر نام لیتی ہیں،وہ کہتی ہیں یہ افراد مخبری کا کردار ادا کر رہے ہیں،یہ ہماری پارٹی میں غدار ہو سکتے ہیں۔اجلاس کے دوران ان تین لوگوں میں سے ایک بندہ موجود ہوتا ہے جو کہ بہت اہم رکن اسمبلی بھی ہیں۔ مریم نواز انہیں باقاعدہ ڈانٹتی ہیں۔جس پر انہوں نے کہا کہ میں یہ رویہ برداشت نہیں کروں گا، پارٹی نہیں چھوڑوں گا لیکن اس رویے کے خلاف احتجاج کروں گا۔رانا عظیم نے مزید کہا کہ آنے والے دنوں میں لاہور سے اہم ترین رہنما نواز شریف کے بیانئے کی مخالفت کرتے نظر آئیں گے۔یہ رہنما لاہور کے جلسے سے قبل کھل کر سامنے آ سکتے ہیں۔

 

حمزہ شہباز کو رہائی کب ملے گی؟ نون لیگی قائدین  نے سر جوڑ لئے

حمزہ شہباز کو رہائی کب ملے گی؟ نون لیگی قائدین نے سر جوڑ لئے

پاکستان مسلم لیگ نون کے مرکزی رہنما اور پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حمزہ شہبازشریف کی رہائی کے لئے تحریک چلانے کا اعلان کردیا گیا ہے جس کی قیادت خواجہ سعد رفیق کریں گے واضح ہو کہ گزشتہ دنوں حمزہ شہبازکی احتساب عدالت میں پیشی کے موقع پر مسلم لیگ نون کی اعلیٰ قیادت کی جانب سے حمزہ شہبازشریف کو پیغام دیا گیا تھا کہ اُن کی رہائی کے لئے تحریک چلانے کا منصوبہ بنایا گیا ہے تاہم ذرائع بتاتے ہیں حمزہ شہبازنے ایسی کوئی تحریک چلانے سے اتفاق نہیں کیا تھا ،کہا جارہا ہے کہ مسلم لیگ نون کی اعلیٰ قیادت اس بات پر یقین رکھتی ہے کہ اگلے سال مڈٹرم انتخابات ہو نگے اور مسلم لیگ نون وفاق اور پنجاب میں اپنی حکومت بنانے کی پوزیشن میں ہوگی جس کے بعد حمزہ شہباز کا وزیراعلیٰ پنجاب بننا یقینی ہے۔واضح ہوکہ حمزہ شہباز پر منی لانڈرنگ کے الزامات کے تحت فرد جرم عائد کی تھی تاہم انھوں نے عدالت کو دئے گئے بیان میں کہا تھا کہ وہ الزامات قبول کرنے سے انکار کرتے ہیں اور ٹرائل کے دوران وہ ثابت کریں گے کہ ان پر لگائے گئے تمام الزامات سیاسی انتقام کے تحت بنائے گئے ہیں ۔دوسری جانب مسلم لیگ نون کی اعلیٰ قیادت نے حمزہ شہباز کی رہائی کے لئے تحریک چلانے کی حتمی منظوری دیدی ہے اور پی ڈی ایم کے جلسہ لاہور کے فوری بعد لاہور سے اس تحریک کا آغاز کیا جائے گا،اس سلسلے میں پارٹی کارکنوں کو تیاری کرنے کی ہدایات دیدی گئی ہیں۔یہاں پر یہ بات قابل ذکر ہے کہ حمزہ شہباز کی رہائی کی غرض سے تحریک چلانے کی منظوری پارٹی قائد میاں نوازشریف اور نون لیگی صدر میاں شہبازشریف کی ہدایت پر شروع کی جارہی ہے۔

رہائی کی تحریک کا اعلان، حمزہ شہباز کا صاف انکار

رہائی کی تحریک کا اعلان، حمزہ شہباز کا صاف انکار۔۔۔ وجوھات بھی سامنے آ گئیں#HamzaShehbaz #ShehbazSharif #NawazSharif

Posted by Hamza Shahbaz Sharif on Thursday, November 19, 2020

بدترین دھاندلی کے باوجود سادہ اکثریت بھی حاصل نہ کرنا شرمناک شکست؛ مریم نواز نے پی ٹی آئی کو آئینہ دکھا دیا

بدترین دھاندلی کے باوجود سادہ اکثریت بھی حاصل نہ کرنا شرمناک شکست؛ مریم نواز نے پی ٹی آئی کو آئینہ دکھا دیا

مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے گلگت بلتستان انتخابات کے نتائج پر کہا ہے کہ پوری ریاستی طاقت، حکومتی اداروں، سرکاری مشینری کا زور زبردستی اور جبر کے ہتھکنڈوں سے وفاداریاں تبدیل کرانے اور بدترین دھاندلی کے باوجود سادہ اکثریت بھی حاصل نہ کرنا شرمناک شکست ہے۔

مریم نواز نے اپنے ٹوئٹ میں کہاہے کہ گلگت بلتستان میں پی ٹی آئی کا نہ پہلے کوئی وجود تھا نہ اب ہے،اسکو بھیک میں ملنے والی چند سیٹیں دھونس، دھاندلی، مسلم لیگ ن سے توڑے گئے امیدواروں اور سلیکٹرز کی مرہون منت ہیں، انہوں نے کہاکہ وفاق میں موجود حکمران جماعت کوپہلی بار یہاں ایسی شکست فاش ہوئی ہے، یہ شکست آنے والے دنوں کی کہانی سنارہی ہے۔